یقینا گزشتہ ہفتہ کوکا۔کولا پاکستان کی جانب سے بھرپور رہا جس کے ساتھ میوزک کی تین بڑی مہمیں شروع کی گئی ہیں۔ اس کا آغاز کوک اسٹوڈیو فار ڈیف (سماعت سے محروم افراد کے لئے کوک اسٹوڈیو) سے ہوا جس میں پاکستان میں سماعت سے محروم افراد کو موسیقی کے منفرد تجربے سے روشناس کرایا گیا۔ اس مہم کا مقصد یہ ہے کہ عالمی پلیٹ فارم پر اس کے بارے میں آگہی پیدا کی جائے۔ پاکستان میں لگ بھگ 90 لاکھ افراد سماعت سے محروم ہیں۔ اس جدید اقدام کے ذریعے ٹیکنالوجی کو کمپنی کے تصور کے ساتھ شامل کرکے کوک اسٹوڈیو کے ذریعے سماعت سے جزوی محروم یا کلی محروم افراد موسیقی کے بنیادی تجربے سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔ یہ مہم گزشتہ ہفتے ڈیف ریچ پروگرام پاکستان کے ساتھ کراچی میں شروع کی گئی۔ تقریبا ایک ہفتے قبل اس کے آغاز کے ساتھ کوک اسٹوڈیو کی جانب سے سماعت سے محروم افراد کے لئے اس اقدام نے دنیا بھر میں دھوم مچادی۔ اسے 30 لاکھ سے زائد بار دیکھا جاچکا ہے اور اسے بین الاقوامی سطح پر معروف نیوز فیڈز جیسے بزفیڈز اور ہفنگٹن پوسٹ نے بھی جگہ دی۔  

اپنے بہترین ذائقے، توانائی بڑھانے، مثبت سوچ اور لوگوں کی شمولیت کی وجہ سے کوکا۔کولا کو دنیا بھر میں پسند کیا جاتا ہے۔ اس بنیاد پر کوکا۔کولا پاکستان نے 2016 کی سب سے بڑی، سب سے زوردار اور سب سے جاندار مہم 'ظالما کوکا۔کولا پلادے 'چلائی۔ اس ٹی وی سی میں جدید دور کے نور جہاں کے مشہور فلمی نغمے کو ری میک کیا گیا ہے اور جس میں کوک میوزک کے لئے بھرپور خواہش اور دلچسپی ہے۔ اس مہم نے اس خیال کو جامع بنادیا کہ میوزک کوکا۔کولا کا تجربہ بڑھاتی ہے، اس لئے کوکا۔کولا کے ساتھ میوزک سے ہر لمحہ خاص بن جاتا ہے۔ اس دور کا مثالی آغاز میشا شفیع اور عمیر جسوال سے ہوتا ہے جس کے ساتھ یہ مہم شروع ہوتی ہے۔ یہ مہم پہلے ہی الیکٹرانک اور ڈیجیٹل میڈیا پر انتہائی دھوم مچا چکی ہے لیکن اصل میں آپ دیکھ سکتے ہیں کہ ہر پاکستانی ٹھنڈی یخ کوک کے ساتھ اس یادگار گانے کو گنگنا رہا ہے۔

جب پوری قوم صرف لفظ #ظالما سے لطف اندوز ہورہی تھی، کوکا۔کولا پاکستان عوام کی انتہائی دلچسپی کے حامل کوک اسٹوڈیو سیزن 9 کا پرومو منظر عام پر لے آیا جو 13 اگست 2016 کو نشر ہوگا۔ گزشتہ سال روح کو تحریک بخشنے والا نغمہ سوہنی دھرتی تھا۔ اس سال کوک اسٹوڈیو کے پرومو میں 40 آرٹسٹس نے اے راہ حق کے شہیدوں کے نغمے میں ان لوگوں کو رقت آمیز طور پر خراج عقیدت پیش کیا جنہوں نے ہماری قوم کے لئے اپنی زندگیوں کی قربانیاں دیں۔ یہ کوک اسٹوڈیو کے لئے بھی اعزاز کی بات ہے کہ اسے گانے والوں میں عظیم قوال امجد صابری بھی شامل تھے جو اس سیزن کی ریکارڈنگ کے کچھ ہی عرصے بعد ہم سے بچھڑ گئے۔

کوکا۔کولا پاکستان نے ایک بار پھر میوزک کی طاقت، نظریئے کی تشکیل کو ایک بار پھر ثابت کردیا ہے۔ میوزک اپنی آواز بلند کرنے، قومی کرداروں کو بحال کرنے اور جذبات بکھیرنے کے لئے ایک موثر ذریعہ ہے۔