عدیم قدیر کوکاکولا پاکستان کے ایڈمن اور فیسیلیٹیز (سہولیات) کے افسر ہیں جو ہمارے ایسے ہیرو ہیں جن کی کبھی شہرت نہیں ہوئی۔ٹریول ویزہ کی دستیابی ممکن بنانے سے لے کر خریدوفروخت اور ایجنسی کی مینجمنٹ اور اس کی طاقت کو یقینی بنانا کہ روزمرہ کے کام بڑے ہموار طریقے سے ہوتے رہیں ان کی ذمہ داری ہے۔عدیم قدیر نے جرنی کی ٹیم کو بتایا کہ پرسکون ہونا اور خود پر قابو رکھنا کیسا لگتا ہے اور ان کا کوکاکولا کے پہلے ایمبسڈر ونر ہونے کا تجربہ کیسا تھا۔


میں ہر دن کا آغاز جلدی کرتا ہوں اور اس بات کو یقینی بناتا ہوں کہ سارا متعلقہ عملہ موجود ہے تاکہ روزمرہ کی سرگرمیاں بلارکاوٹ جاری رہ سکیں۔میں ہمارے ایچ آر ڈائریکٹر فیصل ہاشمی کی بھی مدد کرتا ہوں تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ ہم سے وابستہ لوگوں کی ضروریات پوری ہو سکیں۔

میں عام طور پر کیفے ٹیریا میں وینڈرز سے ملتا ہوں تاکہ کھانے کی کوالٹی پر نظر رکھی جا سکے اور اس کے ساتھ ہی میں ای میلز کا بھی خیال رکھتا ہوں اور ان کا موں کا بھی جو کوکاکولاپاکستان کی لیڈرشپ ٹیم کی طرف سے مجھے سونپے جاتے ہیں۔

میرے فرائض کے دو حصے ہیں۔میں کمپنی کے انتظامی کردار کا دھیان رکھتا ہوں جیسا کہ سفری ضروریات، بینکنگ، کاروں کی ضروریات وغیرہ۔میں وینڈرز اور دیگر ایجنسیوں کو بھی سنبھالتا ہوں تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ ہمارے کام کرنے کی جگہ پاکستان میں سب سے بہترین ہو۔

یہ بات میرے لئے اہم ہے کہ میں ہمارے ساتھ وابستہ لوگوں کو سپورٹ فراہم کروں کیونکہ جب تک میں ہنس ہنس کر کوکاکولا ٹیم کے مصروف دنوں میں ان کی مدد کر رہا ہوں میں خوش ہوں۔

جب میں چھوٹا تھاتو میں سماجی کارکن بننا چاہتا تھا۔میں ہمیشہ سے حساس رہا ہوں اور چاہتا تھا کہ لوگوں کے کام آؤں۔کوکاکولا پاکستان سماجی مسائل سے باخبر کمپنی ہے اور اس کے ساتھ اس کا کام کرنے کا کلچر بھی کامیاب ہے لہٰذا مجھے یہ اپنے لئے بہترین لگی۔اس سال مجھے کمپنی میں کام کرتے ہوئے چار سال مکمل ہو جائیں گے۔

میرا اب تک کا سب سے پسندیدہ پراجیکٹ ہمارے نئے دفتر کی تیاری تھا۔ہماری لیڈرشپ ٹیم کی رہنمائی میں ہم نے گلبرگ تھری میں اپنا نیا دفتر قائم کیا۔میں نے اس جگہ کو بہتر بنانے اور دفتر کی بروقت تکمیل کیلئے وینڈرز کو سنبھالنے میں مفید کردار ادا کیا۔کبھی کبھار تو میں کام کی جگہ پر ہی سو جاتا تھا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ ٹھیکیدار درست کام کر رہے ہیں اور سست نہیں ہو گئے۔ہمیں دفتر کو پوری طرح مکمل کرنے میں نو ماہ کا عرصہ لگا اور ہم اس جگہ کو مستقل بہتر بنا رہے ہیں۔

میری پسندیدہ مہم کریزی فارگڈ تھی کیونکہ اس میں پاکستان کے ان ہیروز کو بڑے خوبصورت انداز میں سامنے لایا گیا تھا جن کی کبھی تشہیر نہیں ہوئی تھی۔

میری ملازمت کے بارے میں مزے کی بات یہ ہے کہ میں نے ہر کسی کے ساتھ کام کیا ہے۔مجھے لوگوں کی مدد کر کے ذاتی اطمینان ملتا ہے۔کبھی کبھار دکانداروں سے معاملہ کرنا مشکل ہو سکتا ہے لیکن میں اپنے کام کی جگہ پر چیلنجز سے لطف اندوز ہوتا ہوں کیونکہ اس سے پیشہ وارانہ طور پر بھی اور ذاتی طور پر بھی آگے بڑھنے میں مدد ملتی ہے۔

اسی طرح میں کبھی ایسا محسوس نہیں کرتا کہ کام صرف ایک ذمہ داری ہے بلکہ مجھے اپنے دفتر آنا اور اپنے ساتھیوں سے ملنا پسند ہے۔اس سال پی اے سی کی ٹیم نے اپنا پہلا انٹریکٹو ایمبسڈر پروگرام شروع کیا اور میں کوکاکولا کا پہلا ایمبسڈر بن گیا۔پہلے کوکاکولا ایمبسڈر کا اعزاز ملنے نے مجھے بہت خوش کر دیا۔کیونکہ اس ٹائٹل کو جیتنے سے میرا یہ یقین مضبوط ہو گیا ہے کہ کوکاکولا پاکستان ایک ایسی جگہ ہے جو اپنے ساتھ وابستہ لوگوں کو اپنے نظام میں وہ عزت دیتی ہے جس کے وہ مستحق ہیں۔

کوک میرا پسندیدہ ترین مشروب ہے فل سٹاپ۔